First Period After Pregnancy First period after having a baby

First Period After Pregnancy First period after having a baby

First Period After Pregnancy First period after having a baby

First Period After Pregnancy First period after having a baby Menstrual bleeding results in rupture of the uterine membrane due to hormonal changes. When the woman is not pregnant, the lining of the uterus does not need to be thickened, which is why menstrual bleeding can result from the breakdown of the extra cervical membrane.

Otherwise, when the woman is pregnant, the uterine membrane becomes thicker so that the baby can grow and be protected safely in the uterus. This is why the membrane does not break and there is no bleeding during pregnancy.

First Period After Pregnancy First period after having a baby After nine months, when the baby is born, the hormones begin to function normally. The uterus also returns to its original shape and shape. As a result, too much excess tissue is removed. This process is seen in the first menstrual cycle after pregnancy.

It doesn’t matter if the delivery is normal or through the operation, bleeding after childbirth is a normal and naturally occurring physical condition. This bleeding is called nephews, which lasts for 2-6 weeks after childbirth. In the first 3-10 days, the blood flow is high and then gradually decreases.

Fear of the first menstrual period
For new mothers, the firstborn after childbirth is often the most difficult time. The blood is coagulated and often blood clots come together. Is. Bleeding can increase due to physical exertion. This is why mothers may experience extra bleeding when they begin their daily routine after childbirth. All of these symptoms often lead to depression after childbirth.

Information needed for new mothers
Good doctors inform first-time mothers about all these symptoms. This is why they know what they will be experiencing after childbirth. However, there may still be negative events such as infection. New mothers are advised to consult a doctor immediately if they experience any symptoms such as tremor or severe abdominal pain.

Menstrual periods can vary with each dose, but they should be treated just like menstrual periods. Remember, do not use tampons for up to six weeks after birth, which increases the risk of infection.

As with pregnancy, bleeding is a very normal physical process after childbirth. Although women who become first-time mothers often suffer from symptoms. All conditions improve over time. Usually, women are able to handle matters better after childbirth anyway.

حیض کا خون ہارمونل تبدیلیوں کے سبب رحم کی جھلی کے ٹوٹنے کے نتیجے میں آتا ہے۔ جب عورت حاملہ نہیں ہوتی تو رحم کے استرکو موٹا ہونے کی ضرورت نہیں ہوتی اسی لئے اضافی رحم کی جھلی کے ٹوٹنے کے نتیجے میں ماہانہ بلیڈنگ ہوتی ہے۔

دوسری صورت میں جب عورت حاملہ ہوتی ہے تو رحم کی جھلی موٹی ہوجاتی ہے تاکہ بچہ دانی میں بچے کی افزائش اورحفاظت بہترطریقے سے ہوسکے۔اسی وجہ سے جھلی ٹوٹتی نہیں ہے اور دوران حمل بلیڈنگ نہیں ہوتی۔

نو ماہ بعد جب بچے کی پیدائش ہوجاتی ہے تو ہارمون واپس معمول کے مطابق کام کرنے لگتے ہیں۔ رحم بھی اپنے اصلی سائز اورشیپ میں واپس آجاتا ہے۔ جس کے نتیجے میں بہت زیادہ اضافی ٹشوز خارج ہوتے ہیں یہ عمل حمل کے بعد پہلے حیض کے موقع پردیکھنے میں آتا ہے۔

اس بات سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ ڈلیوری نارمل ہوئی ہو یا آپریشن کے ذریعے، بچے کی پیدائش کے بعد ہونے والی بلیڈنگ ایک نارمل اور قدرتی طورپرظہور ہونے والی جسمانی صورتحال ہے۔ یہ بلیڈنگ نفاس کہلاتی ہے جو بچہ کی پیدائش کے بعد 2-6 ہفتوں تک جاری رہتی ہے۔پہلے 3-10 دنوں میں خون کا بہاؤ زیادہ ہوتا ہے پھرآہستہ آہستہ کم ہوتا جاتا ہے۔

پہلی ماہواری کا ڈر

نئی ماؤں کے لئے بچہ کی پیدائش کے بعد پہلی بارہونے والاحیض اکثرمشکل وقت ہوتاہے۔خون کابہاؤتیز ہوتاہے اوراکثرخون کے ٹکڑے بھی ساتھ آتے ہیں۔جوگہرے رنگ اورجیلی کی مانند ہوتے ہیں۔جب رحم سے خون اورٹشوز کا اخراج ہوتا ہے تو اکثرخواتین کو شدید درد ہوتا ہے۔ جسمانی مشقت کے سبب بلیڈنگ میں اضافہ ہوسکتا ہے۔اسی لئے مائیں بچے کی پیدائش کے بعد جب اپنے روزمرہ معمولات کے کام شروع کریں توانھیں اضافی بلیڈنگ کاسامنا ہوسکتا ہے۔ان تمام علامات کے سبب اکثرخواتین بچے کی پیدائش کے بعد ڈپریشن کا شکار ہوجاتی ہیں۔

نئی ماؤں کے لئے ضروری معلومات

اچھے ڈاکٹرز پہلی دفعہ ماں بننے والی خواتین کوپہلے سے ہی ان تمام علامات کے بارے میں آگاہ کردیتے ہیں۔یہی وجہ ہے کہ انھیں معلوم ہوتاہے کہ بچہ کی پیدائش کے بعد انھیں کن حالات کا سامنا ہوگا۔ تاہم اس کے باوجود انفیکشن جیسے منفی واقعات ہوسکتے ہیں۔لہٰذانئی ماؤں کوہدایت دی جاتی ہے کہ اگروہ ایسی کوئی بھی علامت جیسے کپکپی طاری ہونا یا شدید پیٹ درد کی شکایت محسوس کریں تو فوری طور پر ڈاکٹر سے مشورہ کریں۔

حیض کی مدت ہرخاتون میں الگ ہوسکتی ہے لیکن اس میں ماہانہ حیض کی طرح ہی دیکھ بھال کرنی چاہئے۔یہ بات یاد رکھیں کہ پیدائش کے چھ ہفتوں تک ٹیمپنس کا استعمال نہ کریں اس سے انفیکشن کے خطرات زیادہ ہوتے ہیں۔

حمل کی طرح بچہ کی پیدائش کے بعد بلیڈنگ کا ہونا بالکل عام جسمانی عمل ہے۔ اگرچہ پہلی مرتبہ ماں بننے والی خواتین اکثران علامات سے پریشان ہوجاتی ہیں۔ وقت کے ساتھ تمام حالات بہتر ہوجاتے ہیں۔عام طور سے خواتین ویسے بھی بچے کی پیدائش کے بعد معاملات کوبہتر طور پرسنبھالنے کے قابل ہوجاتی ہیں۔

About The Author

Related posts

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Need Help? Chat with us
%d bloggers like this: