Teacher Internship Jobs 2021 Pakistan

Teacher Internship Jobs 2021 Pakistan

پنجاب حکومت نے اعلان کیا ہے کہ یونین کونسلز (یو سیز) کی سطح پر ایک سال کے لیے 13،736 اساتذہ کی خدمات حاصل کی جائیں گی۔

حکومت پنجاب نے خالی نشستوں پر مستقل یا کنٹریکٹ پر اساتذہ کی بھرتی کے بجائے صرف ایک تعلیمی سال کے لیے انٹرن اساتذہ کی بھرتی کے حوالے سے تفصیلات جاری کردی ہیں۔

ان بھرتیوں پر مجموعی اخراجات کا تخمینہ 130.4 ملین روپے لگایا گیا ہے۔ اساتذہ کی یہ بھرتیاں چھ مرحلوں میں کی جائیں گی اور پہلے مرحلے کے لیے پنجاب کے چھ اضلاع کو مختصر فہرست میں رکھا گیا ہے۔ اس کے بعد ہر مرحلے میں اس منصوبے میں چھ اضلاع کا اضافہ شامل ہوگا۔

درخواستیں جمع کرانے کی آخری تاریخ 15 جولائی ہے جبکہ جمع کروائی گئی درخواستوں کی فہرستیں 19 جولائی کو آویزاں کی جائیں گی۔  

انٹرن اساتذہ کا تدریسی سیشن گرمیوں کی تعطیلات کے بعد شروع ہوگا اور سالانہ امتحان 2022 میں مکمل ہوگا۔

ان اساتذہ کو اسکولوں میں ملازمت یونین کونسلز (یو سیز) کی سطح پر دی جائے گی۔ صرف یوسی اور پنچایت کونسل کے بے روزگار امیدوار درخواست دینے کے اہل ہوں گے۔ ملازمت یافتہ اساتذہ کے لیے تبادلے کی کوئی سہولت نہیں ہوگی۔

پرائمری کلاس کے اساتذہ کو تنخواہوں کی مد میں یومیہ 720 روپے (ماہانہ 18،000 روپے) جبکہ مڈل کلاس کے اساتذہ کو 800 روپے یومیہ (20،000 روپے ماہانہ) دیئے جائیں گے۔

میٹرک کی سطح کے لیے اساتذہ کو ایک دن میں ایک ہزار روپیہ (ماہانہ 30،000 روپے) دیئے جائیں گے۔

مرد انٹرن اساتذہ کی عمر 20 سے 50 سال جبکہ خواتین اساتذہ کی عمر 20 سے 55 سال ہوگی۔ چونکہ بھرتیوں کی مدت صرف ایک سال ہے، لہٰذا حکومت عمر میں نرمی کی اجازت بھی دے گی۔

ایجوکیشن اتھارٹی نے کہا ہے کہ ٹیچنگ انٹرنز اپنی رہائش گاہوں کے قریب واقع اسکولوں میں پڑھائیں گے۔

بھرتی کمیٹی میں پانچ ممبران شامل ہوں گے جبکہ اسکول کے سربراہ کمیٹی کے کنوینر ہوں گے۔ والدین، ​​اسکول کونسل کا ایک ممبر، ایک جنرل ممبر اور اس مضمون کے اساتذہ بھرتی کے عمل میں شامل ہوں گے۔

پرائمری کلاس کے اساتذہ کے لیے مطلوبہ قابلیت سیکنڈری ڈویژن کے ساتھ میٹرک اور مڈل کلاسوں کے لیے سیکنڈری ڈویژن کے ساتھ ایف اے یا ایف ایس سی جبکہ اعلیٰ کلاسوں کے لیے سیکنڈ ڈویژن کے ساتھ بی اے یا بی ایس سی پاس اساتذہ کی ضرورت ہوگی۔

انٹرویو کے لیے مختص نمبر 100 ہوں گے جبکہ تعلیمی اسناد یا ڈگری میں الگ الگ اضافی نمبر ہوں گے۔ انٹرنز کے لیے حاضری کا اندراج بھی الگ کردیا جائے گا جبکہ ان کی تنخواہوں میں پیشگی منظوری کے بغیر چھٹی لینے پر کٹوتی کی جائے گی۔

ایف اے، ایف ایس سی کلاسوں کے لیے بھرتی کے لیے انٹرویوز20 سے 22 جولائی، میٹرک کی کلاس کے لیے 24 سے 25 جولائی، مڈل کلاس کے لیے28 سے30 جولائی تک اور انٹرمیڈیٹ کلاسز کے لیے 1 سے 3 اگست تک ہوں گے۔

کامیاب امیدواروں کی میرٹ کی فہرستیں بھی مرحلہ وار آویزاں کی جائیں گی۔ انٹرمیڈیٹ اساتذہ کی فہرست 23 جولائی کو جبکہ میٹرک انٹرنز کی فہرست 27 جولائی کو، مڈل ​​کلاس کے اساتذہ کی فہرست 31 جولائی کو اور 4 اگست کو پرائمری کلاسوں کے اساتذہ کی فہرست ڈسپلے کی جائے گی۔

اساتذہ بھرتی کے بعد ایک ہفتہ کے اندر جوائننگ کے پابند ہوں گے۔ اگر وہ ایسا نہ کر سکے تو ان اساتذہ کی خدمات حاصل نہیں کی جائیں گی۔

ایکسپریس ٹریبیون سے گفتگو کرتے ہوئے پنجاب ٹیچرز یونین کے رہنماؤں حامد شاہ، شاہد مبارک، شفیق بھلوالیہ اور بشارت اقبال راجہ نے اس فیصلے کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ یومیہ بنیادوں پر اساتذہ کی خدمات حاصل کرنا ناانصافی ہے۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت تعلیم کے لیے طویل مدت کی پالیسیاں بنائے اور تمام خالی نشستیں مستقل طور پر پُر کی جائیں۔

دوسری جانب محکمہ تعلیم کا کہنا ہے کہ پنجاب بھر میں اساتذہ کی 70 ہزار آسامیاں  خالی ہیں اور ابھی اتنی زیادہ رقم خرچ کرنا ممکن نہیں ہے۔

Teacher Internship Jobs 2021 Pakistan

The Punjab government has issued details for the recruitment of intern teachers for only one academic year instead of recruiting permanent or contractual teachers on 13,736 vacant seats. The total expenditure on this recruitment is estimated to cost Rs130.4 million.

Hiring will be done in six phases and six districts have been short-listed for the first phase. Thereafter, each phase would entail the addition of six districts in the project. The last date for submission of applications is July 15 while lists of submitted applications will be displayed on July 19. The teaching session of the teaching interns will start after the summer vacation and be completed by the annual examination in 2022.

The hiring in schools will be done on the union councils (UCs) level. Only unemployed candidates of the UC and Panchayat council will be eligible to apply. There will be no transfer facility for the hired educators.

The salaries of primary class teachers will be Rs720 per day (Rs18,000 per month) while teachers for middle classes will receive Rs800 per day (Rs20,000 per month). Educators for matric level will be given Rs 1,000 per day (Rs30,000 per month).

The age of male teacher interns will be 20 to 50 years, while the age of female teacher interns will be 20 to 55 years. Since the recruitment period is only one year, the government will also allow for age leniency.

The education authority has said that teaching interns will teach in schools near their residences. The recruitment committee will comprise five members, while school heads will be the convener of the committee. Parents, a member of the school council, a general member, and a teacher of the subject will be involved in the recruitment procedure.

The required qualification for teachers of primary classes will be matriculation with a second division, and FA or FSC with a second division for middle classes while BA or BSc, with second division, will be the requirement for higher classes.

The marks allocated for the interview would be 100, while the academic certificate or degree will have separate additional numbers.

The attendance register for interns will also be separated while their salaries will be deducted on taking leave without prior approval.

The interviews for recruitment for FA, FSC classes will be conducted from July 20 to 22, matric classes from July 24 to 25, middle classes from July 28 to 30, and intermediate classes from August 1 to 3. The merit lists of the successful candidates will also be displayed in phases. The list for intermediate teachers will be displayed on July 23, matric interns on July 27, middle classes on July 31, and primary classes on August 4. The educators would be bound to give joining within a week after recruitment. If not, the teacher will not be hired.

Punjab Teachers’ Unions leaders Hamid Shah, Shahid Mubarak, Shafiq Bhalwalia, and Basharat Iqbal Raja talking to The Express Tribune, criticized the decision and said that hiring teachers daily was unjust. They demanded that the government make long-term policies for education and all vacant seats be filled permanently. Meanwhile, the education department said that 70,000 teachers positions seats were vacant across Punjab and that it was not possible to spend so much money right away.

 

About The Author

Related posts

3 Comments

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Need Help? Chat with us
%d bloggers like this: